Saudization of companies and establishments in the communications and information technology (CIT) sector.

Under the new regulation, seven major activities in this sector will come under the Nitaqat Saudization program. These include operation and maintenance of information technology, operation and maintenance of communications, infrastructure for information technology, infrastructure for communications, IT solutions, telecom solutions, and mail activities.

All the details of the Nitaqat, such as the percentage of Saudization in each activity, are available in the appendix of the ministerial order by visiting the ministry’s link: https://hrsd.gov.sa/sites/default/files/21022021.pdf

The new regulation, which will come into force effective from March 14 (Shaban 1), is being implemented as part of the existing cooperation between the Ministry of Human Resources and Social Development with the Ministry of Communications and Information Technology and the Human Resource Development Fund, Human Rights Watch, and the Council of Saudi Chambers, represented by the National Committee for Communications and Information and Technology.

انسانی وسائل اور سماجی ترقی کے وزیر. احمد بن سلیمان الراجی نے کمیونیکیشنز اینڈ انفارمیشن ٹیکنالوجی (سی آئی ٹی) کے شعبے میں کمپنیوں اور اداروں کی سعودائزیشن کو ریگولیٹ کرنے کا فیصلہ جاری کیا۔ نئے ضابطے کے تحت اس شعبے میں سات بڑی سرگرمیاں نطاقت سعودائزیشن پروگرام کے تحت آئیں گی۔ ان میں انفارمیشن ٹیکنالوجی کا آپریشن اور بحالی، کمیونیکیشن کا آپریشن اور بحالی، انفارمیشن ٹیکنالوجی کا انفراسٹرکچر، کمیونیکیشن کا انفراسٹرکچر، آئی ٹی سلوشنز، ٹیلی کام سلوشنز، اور میل ایکٹیوٹیز شامل ہیں۔ ہر سرگرمی میں سعودائزیشن کا فی صد حصہ جیسے نطق کی تمام تفصیلات وزارت کے لنک پر جا کر وزارتی نظم کے ضمیمہ میں موجود ہیں: https://hrsd.gov.sa/sites/default/files/21022021.pdf نیا ریگولیشن، جو 14 مارچ (شعبان 1) سے نافذ العمل ہوگا، وزارت مواصلات و انفارمیشن ٹیکنالوجی اور ہیومن ریسورس ڈویلپمنٹ فنڈ، ہیومن رائٹس واچ، اور سعودی چیمبرز کی کونسل کے ساتھ وزارت انسانی وسائل اور سماجی ترقی کے درمیان موجودہ تعاون کے ایک حصے کے طور پر نافذ کیا جارہا ہے۔ قومی کمیٹی برائے مواصلات و معلومات اور ٹیکنالوجی کی طرف سے نمائندگی کی۔

Leave a Reply

Your email address will not be published.